صفحہ اوّل » کاشف نامہ

پاکستان کا مسقبل روشن ہے

مصنف: وقت: اتوار، 14 اگست 2016کوئی تبصرہ نہیں

کاشف نصیرہمارے بچپن میں بهی یوم آزادی پر ایسا ہی جوش و خروش ہوتا تها لیکن پھر جنرل پرویز مشرف آدهمکے۔ جنرل صاحب کے دور میں جہاں قومی ایام کو سرکاری سطح پر شایان شان طریقے سے منانے کی روایات مانند پڑگئی، وہیں انکی پالیسیوں کے سبب پختونخوا اور بلوچستان میں بهی وطن عزیز کے باب میں ناامیدی نے زور پکڑا۔ لال مسجد میں آپریشن ہوا اور کراچی میں لسانی تقسیم کی خلیج گہری ہوگئی۔ زرداری صاحب کا دور بهی اسی ڈگر پر تمام ہوا۔

#شکریہ_نواز_شریف کہ اب یوم آزادی کی وہ رونق بحال ہوگئی ہیں جو ہمارے پچپن کا خاصہ تهیں۔ سرکاری تقاریب نے دوبارہ جان پکڑ لی ہے، پریڈ گراونڈ پهر اسی شان سے سج رہے ہیں، سرکاری پرچم کشائی کهلی فضاؤں میں منعقد ہورہی ہے اور قوم کا جذبہ ملی بهی بیدار نظر آرہا ہے۔ شہری علاقوں اور پنجاب و پختونخوا کے دیہات اس جذبے میں برابر کے شریک ہیں۔ لیکن بلوچستان اور سندھ کے دیہات،  قصبے اور چهوٹے شہروں میں ابھی بهی پسماندگی اور ناامیدی رقص کررہی ہے۔ حب الوطن وہ بهی ہیں، بس غربت اور ناراضگی نے انہیں روک رکها ہے۔ اللہ کریں کہ میاں صاحب اس طرف بهی توجہ دیں۔

میاں صاحب سڑکیں بنانے کے شوقین ہیں جبکہ انکے مخالفین اسپتالوں اور اسکول بنانے پر زور دیتے ہیں۔ میاں صاحب کے مخالفین کو یہ سمجه نہیں آتی کہ سڑکیں پسماندگی کی ضد ہیں۔ جہاں آمد و رفت سہل ہو، وہاں خوشحالی خود ہر گهر پر دستک دیتی ہے۔ چین کے ساتھ معاشی راہداری کا معاہدہ میاں صاحب کی تاریخی کامیابی ہے، جس کا کریڈٹ انہیں ملنا چاہئے۔ گوادر پورٹ بهی دراصل میاں صاحب کا ہی برین چائلڈ تها جسے مشرف صاحب نے بلوچستان آپریشن کرکے برباد کردیا۔ میاں صاحب کو لیکن بلوچستان کے لئے ابهی بہت کچھ کرنا ہے، بلوچوں کی احساس محرومی کو ختم کرنے کیلئے پنجاب کو قربانی دینا ہوگی۔

میاں صاحب ہرگز مثالی قرار نہیں دئے جاسکتے۔ ان میں بہت سی کمزوریاں ہیں۔ جن میں سب سے ممتاز انکی پنجاب بیس پالیٹکس اور اقرباء پروری ہے۔ لیکن اسکے باوجود موجودہ حالات میں ان سے بہتر قیادت پاکستان کو میسر نہیں ہوسکتی۔ دنیا تیزی سے سوشلی کنزرویٹیو اور اکنامیکلی لبرل سیاست کو کامیاب ہوتا دیکه رہی ہے۔ ترکی اور ہندوستان کی مثال ہمارے سامنے ہیں اور امریکی بهی اسی طرف بڑھ رہا ہے۔ میاں صاحب بهی اسی سیاسی قبیلے کے آدمی ہیں۔ اگر کوئی مہم جوئی نہ ہوئی تو 2018 بهی میاں صاحب کا ہوگا۔ پاکستان کا مستقبل روشن اور یوم آزادی کا جوش و خروش اسکی نوید ہے۔

فیس بک تبصرے

تبصرہ کیجیے




آپ ان ایکس ایچ ٹی ایم ایل ٹیگز کو استعمال کرسکتے ہیں:
<a href="" title=""> <abbr title=""> <acronym title=""> <b> <blockquote cite=""> <cite> <code> <del datetime=""> <em> <i> <q cite=""> <s> <strike> <strong>